’ہم نے سوچا زمین رک جائیگی‘، 4 دن ملبے میں زندہ رہنے والی بہنوں کی لرزہ خیز کہانی

ترکیہ میں کئی روز  بعد  ملبے میں دبے رہنے کے باوجودبھی معجزاتی طور پر لوگوں کو زندہ نکالا جارہا ہے،  ان افراد میں ترکیہ کی دوبہنیں ایسی بھی ہیں جن کی ملبے میں دبے ہونے کی کہانی سننے والوں کے رونگٹے کھڑے ہوگئے۔
عرب میڈیا کی ایک رپورٹ  کے مطابق جنوبی ترکیہ سے تعلق رکھنے والی دو بہنوں  ایلف اور زینب کو زلزے کے 4  روز بعد کئی ٹن ملبے کے نیچے سے زندہ نکال لیا گیا تھا۔
عرب میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایلف نامی لڑکی نے بتایا کہ زلزلے کے وقت ہم بیڈ پر تھے، ہمیں لگا تھا کہ زمین  ہل رہی ہے اور رک جائے گی لیکن ایسا نہیں ہوا، پہلے عمارت کا ایک رخ گرا پھر پورا کمرہ گرگیا اور ہم اس دوران بیڈ کے نیچے گھسنے میں کامیاب ہوگئے۔کٹھن اور مشکل دنوں پر بات کرتے ہوئے زینب  نے بتایا کہ ان دنوں میں سو نہیں پاتی تھی، مجھے شدید پیاس لگی تھی لیکن میں نہ ہل سکتی تھی نہ چلا سکتی تھی جس دن ہمیں ملبے سے نکالا جانا تھا ہم اس روز اپنی جینے کی امید بھی کھوچکے تھے لیکن پھر ہمیں آواز آئی اور ہمیں بچالیا گیا جو ہمارے لیے ناقابل یقین تھا۔

اس معجزے کے باوجود ایلف اور زینب اداس ہیں کیوں کہ تاحال ان کے والدین کی کوئی خبر نہ مل سکی ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top