پی ٹی آئی کے سابق ارکان قومی اسمبلی پارلیمنٹ لاجز میں رہائش کی مد میں نادہندہ نکلے

سابق ارکان اسمبلی پر پارلیمنٹ لاجز کے کرائے، بجلی اور سوئی گیس کی مد میں لاکھوں روپے واجب الادا ہیں

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے سابق ارکان قومی اسمبلی پارلیمنٹ لاجز میں رہائش کی مد میں نادہندہ قرار پائے۔

دستاویز کے مطابق سابق ارکان اسمبلی پرپارلیمنٹ لاجز کے کرائے، بجلی اور سوئی گیس کی مد میں لاکھوں روپے واجب الادا ہیں۔

دستاویز کے مطابق سابق وفاقی وزیرفخر امام پارلیمنٹ لاجز کے 2 لاکھ 59 ہزار روپے کے نادہندہ نکلے، فخر امام پر لاجز میں رہائشگاہ کے بجلی کے بل کی مد میں 49 ہزار سے زائد روپے واجب الادا ہیں، فخر امام گھر کے کرائے کی مد میں 2 لاکھ 10 ہزار روپے کے نادہندہ ہیں۔

دستاویز کے مطابق سابق وفاقی وزیر علی زیدی بھی پارلیمنٹ لاجز کے ایک لاکھ 51 ہزار روپے کے نادہندہ ہیں، پی ٹی آئی رہنما صداقت عباسی کے ذمے پارلیمنٹ لاجز کے ساڑھے 7 لاکھ روپے واجب الادا ہیں، پی ٹی آئی رہنما کنول شوزب 5 لاکھ 98 ہزار کی نادہندہ ہیں جب کہ منورہ بی بی 16 لاکھ 12 ہزار کی نادہندہ ہیں، عاصمہ قدیر 4 لاکھ روپے اور عندلیب عباس 60 ہزار روپے کی نادہندہ ہیں، سابق رکن اسمبلی ابراہیم خان 60 ہزار،کرامت علی کھوکھر 85 ہزار کے نادہندہ ہیں۔

دستاویز کے مطابق امجد علی خان کے ذمہ 43 ہزار روپے واجب الادا ہیں، حیدر علی خان 13 لاکھ 92 ہزار، علی خان جدون 56 ہزار، مجاہد علی 11 لاکھ 67 ہزار کے نادہندہ جب کہ شیرعلی ارباب پر 3 لاکھ 61 ہزار اور گل داد خان کے ذمہ 2 لاکھ 96 ہزار واجب الادا ہیں۔

اس کے علاوہ ساجد خان ایک لاکھ 92 ہزار، عامر محمود کیانی 2 لاکھ 69 ہزار کے نادہندہ نکلے، شوکت علی بھٹی 8 لاکھ 40 ہزار اور ملک عمر اسلم 60 ہزار روپے کے نادہندہ ہیں۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top