رمضان کے روزہ کا کفارہ

 رمضان کے روزے توڑنے کا کفارہ کس طرح ادا کیا جائے گا؟
جواب:۔ رمضان کا روزہ جان بوجھ کر بلاعذر توڑ دینے سے کفارہ واجب ہوتا ہے۔ کفارہ یہ ہے کہ (1)ایک غلام آزاد کرے (آجکل یہ صورت موجود نہیں) (2)دو مہینے کے لگاتار روزے رکھے۔ اگر 59روزے تو مسلسل رکھ لیے، کسی وجہ سے ایک روزہ نہیں رکھا جاسکا تو ازسرنو دو مہینے کے لگاتار روزے رکھنے ہوں گے (3)اور اگر روزے نہ رکھے جاسکیں تو ساٹھ مسکینوں کو پورے دن کا کھانا کھلائے (صبح کا ناشتہ، دوپہر اور شام کا کھانا) (4)یا اتنی رقم غریب مسکین کو دے دے جس سے ساٹھ آدمی ایک پورے دن کا کھانا کھاسکیں۔ (بحوالہ صحیح بخاری:حدیث 1935:، صحیح مسلم:حدیث 1111:، ابودائود 2390:، ابن ماجہ:حدیث 1671:)

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top